Ahmadi Muslims hold the unique belief that Jesus (peace be upon him) survived the crucifixion and travelled towards India to continue his ministry among the Lost Tribes of Israel. Furthermore, they claim that his tomb, containing his body, has been recently re-discovered in India where it can be seen to this day. Ahmadi Muslims also assert that this belief is not only upheld by the Holy Quran and the Sayings of Muhammad saw, but even by the Holy Bible itself.
22 April 2014

اَنَا انَّبِیُّ لَا کَذِبْ اَ نَا ابْنُ عَبْدِ الْمُطَّلِبْ


سیدنا حضرت مرزا بشیر الدین محمود ؓ خلیفۃ المسیح الثانی المصلح الموعود فرماتے ہیں:۔
 
غزوہ حنین کے موقعہ پر جب دشمن دائیں بائیں کے ٹیلوں پر چڑھ کر تِیربرسا رہا تھا اور مکہ کے نو مسلموں کے بھاگ جانے کی وجہ سے صحابہ کے پائوں بھی اُکھڑ گئے تھے ۔آپؐ نے اپنے گھوڑے کو ایڑ لگائی اور اکیلے کافروں کے دوردیہ لشکروں میں گھس گئے ۔اُس وقت حضرت ابوبکر ؓ نے آگے بڑھ کر آپؐ کے گھوڑے کی باگ پکڑ لی اور کہا ۔یا رسول اللہ ؐ مسلمانوں کو لوٹنے دیجئے وہ تھوڑی دیر میں ہی آپؐ کے گرد جمع ہو جائیں گے ۔اس پر آپ ؐ نے حضرت ابو بکر کو سختی سے ہٹا دیا اور فرمایا ،میرے گھوڑے کی باگ چھوڑ دو اور گھوڑے کو ایڑ لگاتے ہوئے یہ کہتے ہوئے آگے بڑھے کہ :۔
اَنَا انَّبِیُّ لَا  کَذِبْ۔۔۔۔۔۔اَ نَا ابْنُ عَبْدِ الْمُطَّلِبْ
کتنا عظیم الشان  فرق ہے مسیح علیہ السلام  میں اور  میرے  آ قا میں ۔وہ ساری  رات  یہ دعا ئیں مانگتا رہا کہ اے میرے باپ  اگر ہو سکے تو  یہ پیا لہ مجھ سے ٹل جائے  متی باب26 آیت 39
مگر پھر بھی اسکو لو گوں  نے خدا بنا دیا۔وہ صرف دو گھنٹے صلیب پر لٹکا رہا اور اتنے عرصہ میں ہی خدا تعالیٰ سے شکایت کرنے لگا کہ اے میرے خدا تُو نے مجھے کیوں چھوڑ دیا ۔ متی باب 27 آیت  47
مگر میرا محمد ﷺ ایسے دشمن کے نرغہ میں گر گیا جو دو طرف پہاڑوں پر چڑا ہو ا تھا اور دونوں طرف سے اس پر تیراندازی کر رہا تھا اور اس کے ساتھی ایک فریب میں آکر بھاگ گئے تھے مگر پھر بھی وہ اپنے خدا سے مایوس نہیں ہوا اور پھر بھی اُس نے یہی کہامیں انسان ہوں خدا نہیں
 کسیی اندھی ہے وہ دنیا جو ان واقعات کے بعد بھی مسیح  ؑ کو آسمان پر چڑھاتی ہے اور محمد ﷺ کو زمین میں دفن کرتی ہے ۔اگر آسمان پر کوئی چڑھ سکتا تھا تو محمد ﷺ اور اگر زمین میں دفن ہونے کا کوئی مستحق تھا تو مسیح  ؑ ناصری۔مگر یہ طاقت اللہ ہی کو ہے کہ وہ لوگوں کو آنکھیں دے کہ وہ ہر ایک کا مقام پہچانیں ۔

About Me

Kashif Khalid is a student in Jamia Ahmadiyya Qadian. He had devoted his life to the service of Ahmadiyyat the true Islam . Add him on: Facebook & Twitter

  • Share to Facebook
  • Share to Twitter
  • Share to Google+
  • Share to Stumble Upon
  • Share to Evernote
  • Share to Blogger
  • Share to Email
  • Share to Yahoo Messenger
  • More...

0 comments:

Post a Comment